وقارِ علم کا مسند نشیں، اختر رضاخاں ہے

علامہ عبد الستار ہمدانی مصروفؔ،گجرات،ہند


مرے مرشدکا سچا جانشیں ، اختررضا خاں ہے
کمال و فضل کا پیکر حسیں ، اختر رضا خاں ہے

رضا کے علم کا وارث ، رضا والوں کا تو قائد
ترے آگے جھکی سب کی جبیں، اختررضا خاں ہے

لقب ’’ تاجِ شریعت ‘‘ کا دیا عالم کے علماء نے
وقارِ علم کا مسند نشیں ، اختر رضا خاں ہے

ترا فتویٰ ، ترا تقویٰ ، جزاک اللہ ، جزاک اللہ
برائے حق ، برائے نکتہ چیں ، اختر رضا خاں ہے

کمال حجۃ الاسلام کا تو مظہر کامل
جہانِ علم تجھ پر آفر یں ، اختر رضا خاں ہے

نظر آتا ہے جیلانی میاں کا عکس کامل تو
شبیہ تیری بھی مثل اُو حسیں ، اختر رضا خاں ہے

شریعت کا ، طریقت کا مسائل اور تصوف کا
جواب حق برائے نکتہ چیں ، اختر رضا خاں ہے

علالت میں ، نقاہت میں ، حضر میں اور سفر میں بھی
ہر اک جا خادم دین متیں ، اختر رضا خاں ہے

تواضع کا حسیں پیکر ، برائے اہل سنت تو
وہابی پر ہمیشہ آتشیں ، اختر رضا خاں ہے

رخِ روشن ترا دیکھا ، ہوا حاصل سکونِ دل
ہوا مسرور یہ قلب حزیں ، اختر رضا خاں ہے

مرے آقائے نعمت ، جانِ مصروفؔ حزیں قرباں
مرے مرشد کی یادِ آفریں ، اختررضا خاں ہے

Menu
error: Content is protected !!