معتمد ِ سرکار مفتیٔ اعظم حضرت علامہ مفتی قاضی عبدالرحیم صاحب بستوی رحمہ اللہ 

مرکزی دارالافتاء بریلی شریف

معتمد مفتیٔ اعظم حضرت علامہ مفتی قاضی عبد الرحیم بستوی علیہ الرحمہ (سابق رئیس مرکزی دارالافتاء ،بریلی شریف) ،حضورتاج الشریعہ دام ظلہٗ علینا کی تصنیف ’’شرح حدیثِ نیت ‘‘ پر پیشِ لفظ لکھتے ہوئے رقم طرز ہیں:

خانوادۂ اعلیٰ حضرت عظیم البرکت شیخ ا لاسلام والمسلمین امام احمد رضا خان فاضل بریلوی رحمۃ اللّٰہ علیہ کے گلستان میں حضرت علامہ مفتی محمد اختر رضا خان ازہری دامت فیوضہ کی ذات گرامی محتاج تعارف نہیں ہے، موصوف حضرت مفسر اعظم مولانامولوی محمدابراہیم رضا خان نور اللّٰہ مضجعہ کے لخت جگر اور حضور حجۃ الاسلام مولانا حامد رضاخان نور اللہ مرقدہٗ کے نور دیدہ اور حضور سیدی الکریم مفتی اعظم ہند مو لانا مصطفی ٰرضا خان قدس اللّٰہ سرہ العزیز کے نور نظر ہیں۔
بایں طور آپ کے اندر ان عظیم و فخیم نسبتوں کے لحاظ سے اوصاف حمیدہ واخلاق کریمانہ کی جھلک جھلک رہی ہے اور سب ہی حضرات گرامی کے کمالات علمی و عملی سے آپ کو گراں قدر حصہ ملا ہے ، فہم و ذکا، قوت حافظہ و اتقا اعلیٰ حضرت فاضل بریلوی قدس سرہٗ سے جودت طبع و مہارت تامہ ،عربی ادب حضرت حجۃالاسلام قدس سرہٗ سے فقہ میں تبحرو اصابت ،حضور مفتی اعظم ہند قدس سرہٗ سے قوت خطابت و بیان پدر بزرگوار حضرت جیلانی میاں قدس سرہٗ سے گویا مذکورۃ الصدر ارواح اربعہ سے وہ تمام کمالات علمی و عملی آپ کو وارثۃًحاصل ہوگئے ہیں جس کی رہبر شریعت و طریقت کو ضرورت ہوتی ہے اور سلسلہ قادریہ برکاتیہ رضویہ کی مسند رُشد و ارشاد بھی موصوف کی ذات گرامی سے آراستہ و پیراستہ ہے اور ہزار ہا بندگان خدا آپ ہی سے اپنی عقیدت کو وابستہ کر چکے ہیں ۔

شرح حدیث نیت ،صفحہ :۴،مطبوعہ:ادارہ معارف نعمانیہ ،لاہور

Menu
error: Content is protected !!