فضیلۃ الشیخ خالد ثابت مصری حفظہٗ اللہ

 

معروف مصری مبلغ ومصنف ،بانی دارالمقطم قاہرہ مصر اپنی کتاب ’’انصاف الامام‘‘ میں رقم طراز ہیں:۔

نظرت إلی وجہ الشیخ الکبیر محمد أختر والبھاء یکسوہ، والسکینۃ والوقار یجللانہ، واستمعت إلی کلماتہ ـ بلغۃ عربیۃ صحیحۃـ تخرج من فمہ فی قوۃ وثقۃ تصدح بالحق المبین. فوجدتُنی أقول: سبحان اللہ… ذریۃ بعضھا من بعض۔
ترجمہ: میں نے شیخ کبیر اختر (رضا ازہری دام ظلہ) کے چہرے کی طرف دیکھا اس حال میں کہ حسن وجمال اُن کو گھیرے ہوئے ہے اور سکینہ ووقار اُن پر غالب ہے، اور میں نے صحیح عربی زبان میں اُن کے کلمات سُنے جو حقِ مُبین کو بلند کرتے ہوئے اُن کے مُنہ سے قوت وثقاہت کے ساتھ نکل رہے ہیں۔ تو میں نے خود کو پایا کہ میں کہہ رہا ہوں:      ۔ سبحان اللہ! “ذریۃ بعضھا من بعض”۔

(ایسی ذریت جس کا بعض بعض سے ہے۔ یہ ایک عربی محاورہ ہے جس کا حاصل یہ ہے کہ حضور تاج الشریعہ اپنے اجداد کے فضل وکمال کے وارث اور مظہر ہیں۔ )

(انصاف الامام، صفحہ:۱۴۷، ناشر: دارالمقطم للنشر والتوزیع، قاہرہ)

Menu
error: Content is protected !!